اپنا ووٹ کس طرح ڈالیں:

  1. انٹرنیٹ پر www.powertotheparents.org پر جائیں
  2. اسکرین پر اس بٹن پر کلک کریں جس پر "ووٹ" ( “VOTE”) لکھا ہے
  3. اپنا یگانہ "ووٹنگ شناخت" (“Voting ID”) اور "پاس ورڈ" (“Password”) ٹائپ کریں جو از قبل مہیا کیا گیا تھا۔ برائے مہربانی نوٹ کریں کہ یہ وہی معلومات ہیں جنکا آپ نے 27 مئی تا 3 جون کے مستند انتخاب کنندگان کے ووٹ دینے کی معیاد کے دوران استعمال کیا تھا۔
  4. جب امیدواروں کی فہرست سامنے آئے، تو ہر امیدوار کے بارے میں مزید جاننے کے لیے "تفصیلات"(“DETAILS”) پر کلک کریں اور اس امیدوار کے نام کے آگے والے خانے میں کلک کریں جنکو آپ ووٹ دینا چاہتے ہیں
  5. اپنے منتخب کردہ امیدوار کے بارے میں معلومات ملاحظہ کرنے کے لیے اس بٹن پر کلک کریں جس پر "اگلا" (“NEXT”) لکھا ہے
  6. اپنا ووٹ ڈالنے کے لیے "داخل کریں" (“SUBMIT”) پر کلک کریں۔

والدین کا مشاورتی ووٹ: 18 مئی تا 25 مئی

نیو یارک شہر محکمٔہ تعلیم نے 2011 کے اجتمائی اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے انتخابات کے مشاورتی ووٹ کو دوبارہ منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ گزشتہ طور پر 1 مئی تا 7 مئی کے دوران ڈالے گئے ووٹوں کو شمار نہیں کیا جائے گا۔ اگر آپ نے، 1 مئی تا 7 مئی کے دوران ووٹ ڈالا تھا تو، آپ کو دوبارہ ووٹ ڈالنے کی ضرورت ہو گی۔ نئے مشاورتی ووٹ کا انعقاد 18 مئی، 2011 تا 25 مئی، 2011 کے دوران کیا جائے گا۔ نیو یارک شہر پبلک اسکولوں کے تمام والدین کی اپنے امیدوار کی ترجیحات کی نشاندہی کرنے کے لیے ایک مشاورتی ووٹ ڈال کر اجتمائی اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے انتخابات میں شرکت کریں۔

اکثر اوقات پوچھے جانے والے سوالات

میں ووٹ کب ڈالوں گا؟

والدین 18 مئی تا 25 مئی، 2011 کے دوران مشاورتی ووٹ ڈال سکتے ہیں۔

میں ووٹ کیسے ڈالوں گا؟

آپ اپنے بچے کا ڈاک کا زپ کوڈ اور او ایس آئی ایس (OSIS) نمبر داخل کر کے آن لائن ووٹ ڈال سکتے ہیں۔ * اگر آپ کو ووٹ ڈالنے کے لیے لاگ اِن کرنے میں دشواری ہو رہی ہے تو، براہِ کرم دفتر برائے خاندانی معلومات اور عمل سے 212-374-4118 پر رابطہ کریں۔ آپ ووٹ ڈالنے کے لیے اپنے اسکول میں بھی جا سکتے ہیں۔

* براہِ کرم نوٹ کریں: اگر ایک اہل خانہ کے کسی ایک اسکول میں ایک سے زیادہ بچے ہیں تو، اہلِ خانہ کو اس اسکول سے وابستہ مشاورتی ووٹ کے دوران ایک ووٹ کے بیلٹ کو داخل کرنے کی اجازت ہے۔ اگر آپ کے ایک اسکول میں ایک سے زیادہ بچے ہیں تو، برائے مہربانی اپنے کسی ایک بچے کا او ایس آئی ایس نمبر استعمال کریں۔

ایک او ایس آئی ایس نمبر کیا ہے؟

ایک او ایس آئی ایس آپ کے طالبِ علم کا ذاتی شناخت نمبر ہے جس کو دفتر برائے طالبانہ نظام (OSIS) کے ذریعے جاری کیا جاتا ہے۔

مجھے طالبِ علم کا او ایس آئی ایس نمبر کہاں مل سکتا ہے؟

آپ کا او ایس آئی ایس نمبر آپ کے بچے کی رپورٹ پر پایا جا سکتا ہے ( زیل میں دیکھیں)۔ آپ اپنے بچے کا او ایس آئی ایس نمبر ایریس پیرنٹ لنک ویب سائٹ پر لاگ آن کر کے یا اپنے والدین ربط دہندہ سے رابطہ کر کے حاصل کر سکتے ہیں۔

اضافی معلومات؟

براہِ کرم دفتر برائے خاندانی معلومات اور عمل (OFIA) سے 212-374-4118 پر رابطہ کریں۔

ایک اجتماعی تعلیمی کونسل کیا ہے؟

اجتماعی تعلیمی کونسل (CEC’s) تعلیمی پالیسی کے لیے مشیران کی ایسی جمعیتیں ہیں جو اسکول کے تدریسی پروگراموں کا جائزہ لینے اور ان کی تشخیص کرنے، زون کی حدود کے لیے منظوری دینے، چانسلر کو صلاح دینے کے لیے ذمہ دار ہوتی ہیں۔ CEC’s نیویارک شہر کے پبلک اسکولوں میں تعلیمی پالیسیوں کو تشکیل دینے میں ایک لازمی اور انتہائی اہم حصہ ہیں۔ ہر CEC کم از کم نو منتخب کردہ رضاکار والدین پر مشتمل ہوتی ہے جو اپنی برادری کے پبلک اسکولوں کے لیے عملی قیادت اور اعانت فراہم کرتے ہیں۔ کونسل کے ارکان کم سے کم ہر ماہ مہتمم کے ساتھ اور عوام الناس کے ساتھ ضلع میں واقع اسکولوں کی موجودہ صورتِ حال کے بارے میں بات چیت کرنے کے لیے اجلاس منعقد کرتے ہیں۔

کل کتنی اجتماعی تعلیمی کونسلیں ہیں؟

نیو یارک شہر میں 32 اجتماعی تعلیمی کونسلیں (CEC’s) ہیں۔ ہر ایک CEC ایک اجتمائی اسکولی ضلع پر کام کرتی ہے جس میں ابتدائی، وسطی اور جونیئر ہائی اسکول شامل ہیں۔

شہر پیما تعلیمی کونسل کیا ہے؟

شہر پیما تعلیمی کونسلیں پالیسی کے لیے مشیران کی ایسی جمعیتیں ہیں جو ہائی اسکول کے طلبا ( شہر پیما کانسل برائے ہائی اسکول)، انگریزی زبان کے متعلمین، ( شہر پیما تعلیمی کونسل برائے انگریزی زبان کے متعلمین )، اور خاص تعلیم کے طلبا ( شہر پیما کونسل برائے خاص تعلیم اور ضلع 75 کونسل)۔ یہ کونسلیں کانسل کے ذریعے نمائندگی کی جانے والی طلبا کی برادریوں کی تعلیمی پالیسیوں پر تجاویز اور تبصرات فراہم کرنے کی، طلبا کی برادریوں کی نمائندگی کرنے والے شہری ضلع میں فراہم کردہ خدمات کی اثر پذیری پر ایک سالانہ رپورٹ کا اجرا کرنے کی، اور مہینے میں کم سے کم ایک بار ایک ایسے عام اجلاس کا انعقاد کرنے کی ذمہ دار ہوتی ہیں جس کے دوران عوام نمائندگی کی جانے والے طلبا کی برادریوں کو درپیش مسائل پر بات چیت کر سکے۔

کل کتنی اجتماعی تعلیمی کونسلیں ہیں؟

چار شہر پیما کونسلیں ہیں۔ یہ کونسلیں، شہر پیما کونسل برائے ہائی اسکولوں، (CCHS)، شہر پیما کونسل برائے انگریزی زبان کے متعلمین (CCELL)، شہر پیما کونسل برائے خاص تعلیم (CCSE)، اور ضلع 75 کونسل (D75 کونسل) ہیں۔

کونسلیں کن افراد پر مشتمل ہوتی ہیں؟

اجتماعی تعلیمی کونسل
نو (9) منتخب کیے گئے والدین قائدین جن میں ہر ایک کا ایک بچہ ضلع کے پبلک اسکول میں شرکت کرتا ہے یا جن کا بچہ پچھلے دو سالوں میں ضلع کے اسکول میں شرکت کر چکا ہو۔ CEC میں کم سے کم ایک والدین کو انگریزی زبان کے متعلمین (ELL) کا والدین ہونا لازمی، اور کم سے کم ایک والدین کو ایک انفرادی تعلیمی منصوبہ (IEP) رکھنے والے طالبِ علم کا والدین ہونا لازمی ہے؛ ۔
برو کے صدر کی جانب سے نامزد کیے گئے دو (2) مقامی مکین اور / یا کاربار کے مالکان؛ اور
ایک (1) ووٹ نہ ڈالنے والا ہائی اسکول کا سینیئر جو کہ ضلع کا مکین ہو اور اپنے اسکول میں منتخب کیا گیا قائد ہو۔

شہر پیما کونسل برائے ہائی اسکول
دس (10) منتخب کیے گئے والدین قائدین؛( ہر برو میں سے دو – جن کے بچے اس برو کے ہائی اسکول میں شرکت کرتے ہیں جس کی والدین نمائندگی کرتے ہیں)؛
شہر پیما کونسل برائے خاص تعلیم کی جانب تقرر کیا گیا ایک (1) رکن؛
شہر پیما کونسل برائے انگریزی زبان کے متعلمین کی جانب سے تقرر کیا گیا ایک (1) رکن؛
عوامی حمایتی کی جانب سے تقرر کیا گیا ایک (1) رکن؛ اور
ایک (1) ووٹ نہ ڈالنے والا ہائی اسکول کا سینیئر جو اپنے اسکول میں منتخب کیا گیا قائد ہو۔

شہر پیما کونسل برائے انگریزی زبان کے متعلمین:
نو (9) منتخب کیے گئے والدین قائدین جن کا بچہ ایک انگریزی زبان کے متعلمین (ELL) پروگرام میں مندرج ہو؛
عوامی حمایت کار کی جانب سے نامزد کیے گئے انگریزی زبان کے متعلمین کی تعلیم میں تجربہ اور / یا معلومات رکھنے والے دو (2) افراد؛ اور
ایک (1) ووٹ نہ ڈالنے والا ہائی اسکول کا سینیئر جو انگریزی زبان کے متعلمین کی خدمات موصول کر رہا ہو۔

شہر پیما کونسل برائے خاص تعلیم:
نو (9) منتخب کیے گئے والدین قائدین جن کے بچے کے پاس ایک انفرادی تعلیمی منصوبہ (IEP) ہو؛
عوامی حمایت کار کی جانب سے نامزد کیے گئے دو (2) افراد جو تعلیمی شعبوں، تربیت، یا معذوری کے حامل افراد کو ملازمت پر رکھنے کا تجربہ اور / یا معلومات رکھتے ہوں؛ اور
ایک (1) ووٹ نہ ڈالنے والا ہائی اسکول کا سینیئر جو خاص تعلیم کی خدمات موصول کر رہا ہو۔

ضلع 75 کونسل:
نو (9) منتخب کیے گئے والدین قائدین جن کا بچہ ضلع 75 کے اسکول میں شرکت کرتا ہے۔ عوامی حمایت کار کی جانب سے نامزد کیے گئے دو (2) افراد جو تعلیمی شعبوں، تربیت، یا معذوری کے حامل افراد کو ملازمت ہر رکھنے کا تجربہ اور / یا معلومات رکھتے ہوں؛ اور
ایک (1) ووٹ نہ ڈالنے والا ہائی اسکول کا سینیئر جو ضلع 75 کے اسکول میں شرکت کر رہا ہو۔

میں اپنی اجتماعی تعلیمی کونسل کو کیسے تلاش کر سکتا ہوں؟

شہر کے 32 اسکولی اضلاع میں سے ہر ایک کے لیے اجتماعی تعلیمی کونسل (CEC) ہے۔ (CEC) کے دفاتر ہر ضلع میں واقع ہیں جن کی یہ نمائندگی کرتے ہیں۔ چار شہر پیما کونسلوں کے دفاتر لانگ آئلینڈ سٹی میں واقع ہیں۔ اسکولی اضلاع اور کونسلوں کی رابطے کی معلومات آن لائن school.nyc.gov پر دستیاب ہے۔

اہلیت

ان کونسلوں میں کون کارگزاری انجام دے سکتا ہے؟
  • اجتماعی تعلیمی کونسل (CECs) کے لیے – گریڈ k-8 پبلک اسکول کے طالبِ علم کے والدین اس ضلع کی CEC میں خدمات انجام دینے کی اہلیت رکھتے ہیں جس میں ان کا بچہ اسکول میں شرکت کرتا ہے۔
  • شہرپیما کونسل برائے ہائی اسکول (CCHS) کے لیے – پبلک ہائی اسکول کے طلبا کے والدین اس برو کے نمائندہ کے طور پر CCHS میں خدمات سرانجام دینے کے اہل ہیں کہ جس میں ان کا بچہ اسکول جاتا ہے۔
  • شہر پیما کونسل برائے انگریزی زبان کے متعلمین (CCELL)کے لئے – پبلک اسکول کے ان طلبا کے والدین CCELL میں خدمات سر انجام دینے کے اہل ہیں جن کا ایک بچہ انگریزی زبان کے متعلمین پروگرام میں مندرج ہے۔
  • شہر پیما کونسل برائے خاص تعلیم (CCSE) کے لیے - ان طلبا کے والدین (CCSE) میں خدمات سر انجام دینے کے لیے اہل ہیں جن کے بچے کے پاس ایک انفرادی تعلیمی (IEP) منصوبہ ہے۔
  • ضلع 75 کی کانسل (D75 کونسل) کے لیے – پبلک اسکول کے ان طلبا کے والدین ضلع 75 کی کونسل میں خدمات انجام دینے کے لیے اہل ہیں جن کا بچہ ضلع 75 کے اسکول میں شرکت کرتا ہے۔
  • حال ہی میں ترمیم کیے گئے ضوابط کے تحت، والدین کی انجمن (PA) / والدین اساتذہ کی انجمن (PTA) کے صدور اور افسران اجتمائی تعلیمی کونسل (CECs) اور شہر پیما تعلیمی کونسلوں کے انتخابات میں کھڑے ہونے کے اہل ہیں۔
  • والدین صرف ایک کونسل میں خدمات انجام دینے کے لیے درخواست دے سکتے ہیں۔
کون ان کونسلوں میں کارگزاری کے لیے مامور نہیں ہو سکتا؟
  • وہ افراد جو منتخب شدہ پبلک آفس یا کسی منتخب شدہ یا مقرر کردہ پارٹی کے کسی عہدے پر فائز ہوں( سوائے اس کے کہ قومی، ریاستی، عدالتی یا دیگر کسی پارٹی کی مجلس کے نمائندے یا قائم مقام نمائندے، یا کسی کاؤنٹی کمیٹی کے ممبر ہوں)؛
  • DOE کے موجودہ ملازمین؛
  • وہ افراد جو کسی سنگین جرم میں سزایافتہ ہوں؛
  • وہ افراد جو کسی اجتماعی اسکول بورڈ، اجتماعی تعلیمی کونسل، شہرپیما کونسل برائے خاص تعلیم، یا شہر پیما کونسل برائے ہائی اسکول سے کسی بدعنوانی کی بدولت نکالے گئے ہوں، یا کسی ایسے جرم کا ارتکاب کیا ہو جس کا تعلق براہِ راست اس کونسل کی خدمت سے ہو؛
  • وہ افراد جو کسی دوسری CEC, CCHS, CCELL, CCSE یا ضلع 75 کانسل میں خدمات انجام دے رہے ہیں؛
  • وہ افراد جن کے بارے میں نیویارک شہر کے مفاداتی تصادم کے قانون کے مطابق، DOE اخلاقی ضوابط کے افسر یا چانسلر کے کسی دیگر عہدیدار کے ذریعے یہ طے کیا گیا ہو کہ ان کا کوئی مالی مفاد کا اختلاف ہے؛ اور
  • وہ افراد جو، اسکول قیادتی ٹیم (SLT)، ضلعی صدور کونسل، برو ہائی اسکول کونسل یا زمرہ I کمیٹی سے کسی بدعنوانی کی بدولت نکالے گئے ہوں، یا کسی ایسے جرم کا ارتکاب کیا ہو جس کا تعلق براہِ راست اس کونسل کی خدمت سے ہو؛
میرا بچہ ایک چارٹر اسکول میں شرکت کرتا ہے، کیا میں کونسل میں خدمات انجام دے سکتا ہوں؟

وہ والدین جن کے بچے ایک چارٹر اسکول میں شرکت کرتے ہیں وہ CEC یا شہر پیما کونسل کے انتخابات میں کھڑے ہونے کے اہل نہیں ہیں۔ البتہ چارٹر اسکول کے طلبا کے والدین کا CEC یا شہر پیما کونسل میں خدمات انجام دینے کے لیے اہلیت کا امکان اسوقت ہے جب ان کو (CEC کے لیے) برو کے صدر کی جانب سے یا (شہر پیما کونسل کے لیے) عوامی حمایت کار کے ذریعے تقرر کیا جائے۔

درخواست دہی

میں کونسل میں خدمات انجام دینے کے لیے کیسے درخواست دے سکتا ہوں؟

اہلیت رکھنے والے والدین کونسل میں خدمات انجام دینے کی درخواست دینے کے لیے آن لائن Powertheparents.org پر ایک مختصر درخواست فارم مکمل کر کے درخواست دے سکتے ہیں۔

درخواستوں کی آخری تاریخ کب ہے؟

9 اپریل، 2011 رات بارہ بجے تک ہے۔

کونسل کے درخواستی فارم کو پُر کرنے میں کتنا وقت لگتا ہے؟

کونسل کے درخواستی فارم کو مکمل کرنے کے کل وقت کا اندازہ 25-30 منٹ تک لگایا گیا ہے۔

کیا میں ایک سے زیادہ کونسلوں میں خدمات انجام دینے کے لیے درخواست دے سکتا ہوں؟

جی ہاں دلچسپی رکھنے والے والدین ایک سے زیادہ کونسلوں میں خدمات انجام دینے کے لیے درخواست دے سکتے ہیں۔

اگر مجھے ایک سے زیادہ کونسلوں میں خدمات انجام دینے کے لیے منتخب کیا جاتا ہے تو کیا ہو گا؟

وہ والدین جو ایک سے زیادہ کونسلوں میں خدمات انجام دینے کے لیے درخواست دیں گے ان کے لیے ان کانسلوں کی درجہ بندی کرنا لازمی ہے جن میں یہ خدمات انجام دینا چاہتے ہیں، والدین کو منتخب کی گئی کونسلوں میں سے اس کونسل میں خدمات انجام دینے کے لیے تقرر کیا جائے گا جس کو انہوں نے اولین ترجیح پر درجہ لیا ہو گا۔

اپنے امیدوار کی درخواست دینے کے علاوہ، کیا والدین کے لیے کونسلوں کے انتخابی طریقہ کار میں شمولیت کرنے کے کوئی اور راستے ہیں؟

جی ہاں، والدین کے لیے شمولیت کرنے کے لیے متعدد راستے ہیں۔ آپ دوسرے امیدواروں کو کونسل کے لیے درخواست دینے پر مائل کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔ مارچ کے اواخر / اپریل کے اوائل میں امیدواروں کے فورم کے دوران امیدواروں سے سوالات پوچھیں، اس امیدوار کی مہم کی مدد کریں جس کی آپ اعانت کرتے ہیں؛ 1 مئی – 7 مئی کے دوران آن لائن مشاورتی ووٹ ڈالیں۔

کیا تمام امیدواروں سے ان کے ضلع کے امیدواروں کے فورم میں شرکت کرنا مطلوب ہے؟

جی نہیں، البتہ امیدواروں کی شرکت کرنے کی پُر زور حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔ فورم امیدواروں کے لیے والدین کے ساتھ براہِ راست مشغول ہونے اور اس بات کا اظہار کرنے کا موقع فراہم کرتے ہیں کہ آپ کیوں یہ سمجھتے ہیں کہ یہ آپ کو کونسل پر خدمات انجام دینے کے لیے منتخب کریں۔

اجتماعی تعلیمی کونسل اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے انتخابات؟

اجتمائی تعلیمی کونسل (CEC) اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے والدین کا انتخاب کس طرح کیا جائے گا؟

CECs کے لیے – والدین ممبران کا انتخاب دو مراحل کے طریق کار کے ذریعے کیا جائے گا۔ پہلا، 1 مئی – 7 مئی کے دوران اجتمائی اسکولی ضلع میں تمام والدین کے ایک مشاورتی ووٹ کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس کے بعد، مستند ووٹ کا انعقاد 10 مئی – 17 مئی کے دوران کیا جائے گا، جس میں اجتمائی اسکولی ضلع میں ہر اسکول کے- PA/PTA کے صدر، سیکریٹری اور خزانچی ( یا ان کے نامزد کردہ ) – جس کو مجموعی طور پر "والدین انتخاب کنندگان" کہا جاتا ہے – ووٹ ڈالنے کے اہل ہوں گے۔

CCHS کے لیے – والدین ممبران کا انتخاب دو مراحل کے طریق کار کے ذریعے کیا جائے گا۔ پہلا، 1 مئی – 7 مئی کے دوران تمام ہائی اسکول کے والدین کے لیے ایک مشاورتی ووٹ کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس کے بعد، مستند ووٹ کا انعقاد 10 مئی – 17 مئی کے دوران کیا جائے گا، جس میں ہر برو کے ہر ہائی اسکول کے- PA/PTA کے صدر، سیکریٹری اور خزانچی ( یا ان کے نامزد کردہ ) – جس کو مجموعی طور پر "والدین انتخاب کنندگان" کہا جاتا ہے – ووٹ ڈالنے کے اہل ہوں گے۔

CCELL کے لیے – والدین ممبران کا انتخاب دو مراحل کے طریق کار کے ذریعے کیا جائے گا۔ پہلا، 1 مئی – 7 مئی کے دوران ELL طلبا کے تمام والدین کے ایک مشاورتی ووٹ کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس کے بعد، مستند ووٹ کا انعقاد 10 مئی – 17 مئی کے دوران کیا جائے گا، جس میں ہر اجتمائی اسکولی ضلع، برو اور ضلع 75 کی ہر ایک صدور کی کونسل، کو اپنے ممبران میں سے ایک ELL طالبِ علم کے والدین کو CCELL کے انتخاب کنندہ کے طور پر خدمات انجام دینے کے لیے منتخب کرنا چاہیئے۔ اگر صدور کی کانسل میں ELL طالبِ علم کا کوئی بھی اہل والدین خدمات انجام نہیں دے رہا ہے تو صدور کی کونسل کو اپنے برو یا ضلع میں سے ELL طلبا کے والدین سے CCELL کے انتخابات کے لیے رضا کارانہ طور پر انتخاب کنندہ کے بطور خدمات انجام دینے کے لیے التماس کرنا چاہیئے۔

CCSE کے لیے – والدین ممبران کا انتخاب دو مراحل کے طریق کار کے ذریعے کیا جائے گا۔ پہلا، 1 مئی – 7 مئی کے دوران ایک انفرادی تعلیمی منصوبہ رکھنے والے (IEP) طلبا کے تمام والدین کے ایک مشاورتی ووٹ کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس کے بعد، مستند ووٹ کا انعقاد 10 مئی – 17 مئی کے دوران کیا جائے گا، جس میں ہر اجتمائی اسکولی ضلع، برو اور ضلع 75 کی ہر ایک صدور کی کونسل، کو اپنے ممبران میں سے ایک انفرادی تعلیمی منصوبہ رکھنے والے طالبِ علم کے والدین کو CCSE کے انتخابات کے لیے ایک انتخاب کنندہ کے طور پر خدمات انجام دینے کے لیے منتخب کرنا چاہیئے۔ اگر صدور کی کانسل میں (IEP) رکھنے والے طالبِ علم کا کوئی بھی اہل والدین خدمات انجام نہیں دے رہا ہے تو صدور کی کونسل کو اپنے برو یا ضلع میں سے IEP رکھنے والے طلبا کے والدین سے CCSE کے انتخابات کے لیے رضا کارانہ طور پر انتخاب کنندہ کے بطور خدمات انجام دینے کے لیے التماس کرنا چاہیئے۔

ضلع 75 کونسل کے لیے – والدین ممبران کا انتخاب دو مراحل کے طریق کار کے ذریعے کیا جائے گا۔ پہلا، 1 مئی – 7 مئی کے دوران ضلع 75 کے تمام والدین کے ایک مشاورتی ووٹ کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس کے بعد، مستند ووٹ کا انعقاد 10 مئی – 17 مئی کے دوران کیا جائے گا، جس میں ضلع 75 میں ہر اسکول کے- PA/PTA کے صدر، سیکریٹری اور خزانچی ( یا ان کے نامزد کردہ ) – جس کو مجموعی طور پر "والدین انتخاب کنندگان" کہا جاتا ہے – ووٹ ڈالنے کے اہل ہوں گے۔

میں اپنا ووٹ کہاں پر ڈال سکتا ہوں؟

ووٹ کو آن لائن powertotheparents.org پر ڈالا جا سکتا ہے۔

کیا CEC اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے انتخابات میں تمام والدین ووٹ ڈال سکتے ہیں؟

جی ہاں، وہ تمام والدین جن کا بچہ نیو یارک شہر کے پبلک اسکول میں داخل ہے آن لائن مشاورتی ووٹ کی اہلیت رکھتے ہیں جس کا انعقاد 1 مئی – 7 مئی، کو کیا جائے گا۔

میں شادی شدہ ہوں کیا میں اور میری شریکِ حیات ہم دونوں ووٹ ڈال سکتے ہیں؟

جی نہیں، مشاورتی ووٹ میں والدین میں سے کوئی ایک ووٹ ڈال سکتا ہے۔

میرے بچے مختلف پبلک اسکولوں میں ہیں، میں کہاں پر ووٹ ڈال سکتا ہوں؟

والدین ہر اسکول/ ضلع میں ووٹ ڈالنے کے اہل ہیں جن میں ان کے بچے شرکت کرتے ہیں۔ البتہ، اگر آپ کے ایک ہی اسکول میں ایک سے زیادہ بچے ہیں تو آپ CEC کے ان انتخابات میں ایک بار ہی ووٹ ڈال سکتے ہیں۔

مجھے انتخابات کے نتائج سے کب اور کیسے مطلع کیا جائے گا؟

نتائج کی توثیق انتخابات کے فروخت کنندہ سے کی جائے گی اور مئی کے اواخر / جون کے اوائل، 2011 میں آن لائن دستیاب ہوں گے۔

اس صورت میں کیا ہو گا اگر میرے ضلع میں انتخاب کنندگان والدین ان کونسل کے ارکان کے علاوہ جو والدین کے ووٹ سے منتخب کیے گئے ہیں، ایک مختلف ارکان کی فہرست کا انتخاب کرنے کو منتخب کرتے ہیں؟ کیا اپیل کا کوئی طریقہ کار ہے؟

مشاورتی ووٹ واجب التعمیل نہیں ہے اور اپیل کا کوئی طریقہ کار نہیں ہے۔ البتہ والدین انتخاب کنندگان سے والدین کے مشاورتی ووٹ کے نتائج کو سنجیدگی سے زیرِ غور لائے جانے کی توقع کی جاتی ہے ۔

میرے PA / PTA میں نائب افسران ہیں ( نائب صدر، نائب خزانچی، نائب سیکریٹری )۔ کیا نائب افسران والدین انتخاب کنندہ ہوسکتے ہیں؟

جی نہیں، اس صورت میں جہاں PA / PTA میں نائب افسران نائب صدر، نائب خزانچی، نائب سیکریٹری ہیں، ان میں PA / PTA کے بقایا ایگزیکیٹیؤ بورڈ کے لیے یہ فیصلہ کرنا لازمی ہے کہ ہر ایک عہدے کے لیے کونسا نائب افسر انتخاب کنندہ کے طور پر خدمات انجام دے گا۔ اس فیصلے سے دفتر برائے خاندانی معلومات اور عمل کو 1 مئی تک مطلع کیا جانا لازمی ہے۔

میرے PA /PTA کا صدر، سکریٹری یا خزانچی CEC یا شہر پیما کونسل کی ایک نشست کے کھڑے ہورہے ہیں۔ کیا یہ والدین انتخاب کنندہ کے طور پر خدمات انجام دے سکتے ہیں؟

جی نہیں،CEC اور شہر پیما تعلیمی کونسل کے انتخابات میں کھڑے ہونے والے PA /PTA کے صدور اور افسران والدین انتخاب کنندہ کے طور پر ووٹ ڈالنے کے اہل نہیں ہیں۔ ایسی صورتوں میں، PA /PTA کے لیے لازمی ہے کہ یہ کونسل کی ایک نشست کے لیے کھڑے ہونے والے صدر، خزانچی اور سیکریٹری کی جگہ کسی اور ممبر کو والدین انتخاب کنندہ کے طور پر منتخب کرے۔

کارگزاری

ایک CEC کے ممبر کیا کرتا ہے؟

کونسل کے ارکان سے توقع کی جاتی ہے کہ:

  • طلبا کی تدریس سے متعلق تعلیمی معیارات کی حصولیابی اور مقاصد کو فروغ دیں؛
  • تربیتوں اور جاری تعلیمی پروگراموں میں شرکت کریں؛
  • مہتمم کی طرف سے داخل کی گئی زون کی حدود کی منظوری دیں؛
  • ضلعی تعلیمی پروگراموں کا جائزہ لیں اور طلبا کی حصولیابی میں انکے اثرات کی تشخیص کریں؛
  • اپنے ضلع میں اسکول کی صورتِ حال پر بات چیت کرنے کے لیے کم سے کم ہر ماہ مہتمم کے ساتھ اور عوام الناس کے ساتھ اجلاس منعقد کریں؛
  • اسکول کی قیادتی ٹیم (SLTs) کے ساتھ مواصلت کریں اور معاونت فراہم کریں؛
  • ایک سالانہ مالیت کے انکشاف کا فارم مکمل کریں؛
  • اجتمائی مہتمم کے انتخاب پر مشاورت کریں؛
  • چانسلر کو اور شہری بوڑد کو ضلع کی تشویشات پر مشاورت دیں۔
شہر پیما کانسل کا ممبر کیا کرتا ہے؟

شہر پیما کانسل کے ممبر سے مندرجہ ذیل کی توقع کی جاتی ہے:

  • ذیل پر مشتمل تعلیمی اور تدریسی پالیسیوں پر تجاویز اور تبصرات فراہم کریں؛
    • CCHS کے لیے – ہائی اسکول میں طلبا؛
    • CCELL کے لیے – دولسانی یا انگریزی بحثیت دوسری زبان پروگرام؛
    • CCSE کے لیے – معذوری کے حامل طلبا کے لیے خدمات کی فراہمی؛
    • ضلع 75 کانسل کے لیے – ضلع 75 خدمات کی فراہمی؛
  • اس ضلع میں جس کی کونسل نمائندگی کرتی ہے اس میں شہری ضلع کی فراہم کردہ خدمات کی اثر پذیری پر ایک سالانہ رپورٹ کا اجرا کرنا؛
  • عوام الناس کے ساتھ کم سے کم ہر مہینے میں ایک اجلاس کا انعقاد کرنا جس کے دوران عوام اس ضلع میں جس کی کونسل نمائندگی کرتی ہے کے طلبا کو درپیش مسائل پر بات چیت کر سکے گی۔
کونسل کے رکن کے طور پر میں کس طرح کے وقت کا پابندِ عہد ہوں گا؟

کونسلوں سے مہتمم اور عوام کے ساتھ ماہوار اجلاسوں میں شرکت کرنے کی توقع کی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ، ارکان کی اسکول کے دوروں اور عوامی فورمز میں جہاں ان کو نیو یارک شہر کے پبلک اسکولوں کے طلبا کے مسائل کے بارے بہتر طور پر آگاہ ہونے کے لیے شرکت کرنے کی پُر زور حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔

کیا ماہوار اجلاسوں میں شرکت کرنا لازمی ہے؟

جی ہاں۔ اگر کونسل کے رکن کی تین سے زیادہ غیر معافی شدہ غیر حاضریاں ہونگی، تو سرکاری طور پر یہ اپنی نشست چھوڑ چکے ہوں گے۔

کیا کونسل کے ارکان کو تنخواہ دی جائے گی؟

جی نہیں، کونسل کے ارکان کی خدمات رضا کارانہ ہیں۔ البتہ، کچھ اخراجات قابلِ بازادائیگی ہیں۔

کونسل کے نئے ارکان کے دورانیے کا آغاز کب ہوتا ہے؟

کونسل کے ارکان کے نئے دورانیے کا آغاز سرکاری طور پر 1 جولائی، 2011 کو ہوگا۔

کونسل کے ارکان سے کتنے عرصے کے لیے خدمات انجام دینے کی توقع کی جاتی ہے؟

کونسل کے ممبران کی معیاد دو سال ہے

کیا کونسل کے ارکان کو ان کے کردار کے لیے تربیت دی جائے گی؟

جی ہاں، کونسل کے ارکان سے ان کے دورانیے کے پہلے تین مہینوں کے اندر ایک تربیت میں شرکت کرنا مطلوب ہے۔ تربیت ارکان کو ان کے اختیارات، نظام اور فرائض کے ساتھ ساتھ عوامی تعلیم کے لیے ذمہ دار دیگر حکومتی اربابِ اختیار کے اختیارات سے مطلع کرنے کے لیے تشکیل دی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ، تربیت کے سیشنز کونسل کے ارکان کو محکمہ تعلیم کی ساخت سے مانوس کرنے اور معلومات اور وسائل تک رسائی حاصل کرنے کے متعلق اطلاعات فراہم کرتے ہیں۔ کونسل کے ارکان کا جاری تعلیم کے پروگراموں میں بھی شرکت کرنا لازمی ہے جو کہ ان کو پبلک اسکول کے نظم ونسق کو متاثر کرنے والے مسائل سے باخبر رکھیں گے۔

مجھے اجتماعی تعلیمی کونسل، شہرپیما تعلیمی کونسل پر مزید معلومات کیسے مل سکتی ہیں؟

برائے مہربانی www. powertotheparents.org پر جائیں، دفتر برائے خاندانی معلومات اور عمل سے (212) 374-4118 پر یا ای میل کے ذریعے cecselectionprocess@schools.nyc.gov پر رابطہ کریں۔